Category: Poetry

مہ و سال آشنائی

مہ و سال آشنائی تیرے نام سے عبارت تیرا غم رہے رسالت کہ یہی متاع ہستی تری دٌلنوازیوں سے تری کج ادائیوں تک کبھی غم کدہ منور کبھی شہر سائیں سائیں کبھی ہجر جانٌ لیوا کبھی وصل روح افزاتیری مہربانیوں نے تری قہرمانیوں کے وہ بجھا دئیے ہیں شعلے جو نظر سے اٹھ کے دل کو غضب آگ دے رہے تھے وہ تمام خواب ہم نے جو گئے برس تھے دیکھے انہیں رب مہرباں نے بہ کمال مہربانی کیا’ ہمکنار منزل مہ و سال آشنائی ترے نام سے عبارت تری آرزو سے پہلے نہ کسی کی آرزو کی نہ...

Read More

ہم جو تاریک راہوں میں مارے گئے

ہم جو تاریک راہوں میں مارے گئے تیرے ہونٹوں کے پھولوں کی چاہت میں ہم دار کی خشک ٹہنی پہ وارے گئے تیرے ہاتھوں کی شمعوں کی حسرت میں ہم نیم تاریک راہوں میں مارے گئے سولیوں پر ہمارے لبوں سے پرے تیرے ہونٹوں کی لالی لپکتی رہی تیری زلفوں کی مستی برستی رہی تیرے ہاتھوں کی چاندی دمکتی رہی جب گھلی تیری راہوں میں شامِ ستم ہم چلےآئے لائے جہاں تک قدم لب پہ حرفِ غزل دل میں قندیلِ غم اپناغم تھا گواہی تیرے حُسن کی دیکھ قائم رہے اس گواہی پہ ہم ہم جو تاریک راہوں میں...

Read More